سید حسن نصر اللہ کی جلوس عاشورہ میں شرکت

 

7- اردو (Urdu)
حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصراللہ نے آج عاشورا کے عظیم جلوس سے خطاب میں لبنان اور علاقے کے بعض مسائل کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ حزب اللہ کسی سے اپنے ہتھیاروں کی حمایت نہیں چاہتی ہے اور نہ کبھی چاہے گي۔انہوں نے کہا کہ شام میں ہماری موجودگي لبنان، شام اور فلسطین کے دفاع کے لئے ہے کہا کہ ہم شام کی حمایت کا سودا چند وزارتی قلم دانوں سے نہیں کریں گے۔

 انہوں نے لبنان کے قومی اتحاد پر زور دیتے ہوئے کہا کہ تفرقہ انگيزی کی سازشوں کو مسترد کیا اور کہا کہ اتحاد و مذاکرات اور حکومت و سیاسی مفاہمت کے ذریعے آپسی مسائل حل کئے جائيں۔سید حسن نصراللہ نے کہا کہ صیہونی حکومت کے خلاف جدوجہد جاری رہے گي۔ انہوں نے مختلف مذاہب کے پیرووں سے اپیل کی کہ تکفیری حلقے سارے مسلمانوں کے خلاف ہیں اور اس کا ثبوت یہ ہے کہ تمام اسلامی ملکوں میں تکفیریوں کے ہاتھوں ہی مسلمانوں کو مسائل کا سامنا ہے لھذا یہ امت مسلمہ کی مشکل ہے اور متحد ہوکر ہی اس مشکل کاحل نکالا جاسکتا ہے۔ حزب اللہ کے سربراہ نے مسئلہ فلسطین کو امت اسلامی کا بنیادی مسئلہ قراردیتے ہوئے کہا کہ فلسطینی کاز سے غفلت کرنے کا کوئي جواز نہیں ہے اور مسلمانوں کو ہر قیمت پر فلسطین کا ساتھ دینا چاہیے۔ انہوں نے کہا ہم اس سال بھی استقامت کا در دینے والے سید الشہدا اور سید المجاھدین حضرت اباعبداللہ الحسین سے بیعت کرتے ہیں۔ انہوں نے عاشورا کے عظیم جلوس میں شرکت کرنے پر عوام کا شکریہ ادا کیا ۔

http://urdu.irib.ir/home/2010-06-28-08-42-28/item/43740-%D9%84%D8%A8%D9%86%D8%A7%D9%86-%D8%B3%DB%8C%D8%AF-%D8%AD%D8%B3%D9%86-%D9%86%D8%B5%D8%B1-%D8%A7%D9%84%D9%84%DB%81-%DA%A9%DB%8C-%D8%AC%D9%84%D9%88%D8%B3-%D8%B9%D8%A7%D8%B4%D9%88%D8%B1%DB%81-%D9%85%DB%8C%DA%BA-%D8%B4%D8%B1%DA%A9%D8%AA

Write a comment

Comments: 0